دردناك آندھرا پردیش کے چتور میں ٹرک نے بھیڑ کو کچلا، 20 کی موت

آندھرا پردیش

دردناك آندھرا پردیش کے چتور میں ٹرک نے بھیڑ کو کچلا، 20 کی موت

آندھرا پردیش میں چتور ضلع کے يےرپےڈ پولیس تھانے کے باہر جمعہ کی دوپہر ایک ٹرک نے لوگوں کی بھیڑ کو کچل دیا جس میں کم از کم بیس افراد ہلاک ہو گئی ہے جبکہ اتنے ہی زخمی ہو گئے ہیں.

بتایا جا رہا ہے کہ ٹرک انینترت ہوکر بجلی کے کھمبے سے ٹکرایا اور اس کے بعد لوگوں، کاروں اور دکانوں پر چڑھ گیا. اس حادثے تررپت سے 25 کلومیٹر دور چتور ضلع میں ہوئی.

چتور کے ایک پولیس افسر نے بتایا کہ پرائمری معلومات کے مطابق بے لگام ٹرک قریب دوپہر 1.30 بجے لوگوں کی بھیڑ پر چڑھ گیا. شکار يےرپےڈ پولیس تھانے کے باہر مختلف عرضیاں دائر کرنے کا انتظار کر رہے تھے تبھی وہاں سے گزر رہا ٹرک ڈرائیور گاڑی پر سے کنٹرول کھو بیٹھا اور ٹرک لوگوں کے اوپر چڑھ گیا.

ایک افسر نے یہاں کہا کہ نائب وزیر اعلی این چینا راجپپا نے واقعہ پر افسوس کا اظہار کیا. انہوں نے تروپتی پولیس سپرنٹنڈنٹ سے بات کی اور زخمیوں کو ضروری علاج علاج مہیا کرانے کی ہدایت دی.

حادثے کی زد میں آنے والے میت پتالپٹٹو-نيوڈوپےٹا اسٹیٹ موٹروے پر غیر قانونی ریت کان کنی کان کنی کے خلاف يےرپےڈ پولیس تھانے کے باہر دھرنا دے رہے تھے. پولیس نے کہا کہ ٹرک پر بالکل اسی لدا تھا اور وہ بہت جےجي سے چل رہا تھا. ٹرک انینترت ہوکر پہلے بجلی کے کھمبے سے ٹکرایا اور اس کے بعد اس نے بہت سے لوگوں کو کچل دیا. وہ کئی دکانوں اور گاڑیوں کو شکست رکا. اسی دوران وہاں پر ایک دکان میں آگ بھی لگ گئی. ٹرک کا ڈرائیور اور کلین دونوں ہی فرار ہو گئے ہیں.

Similar Posts

Share it
Top