تین طلاق کی حقیقت بیان کرنے کے لیے جماعت اسلامی کی مہم

بھارت

بریلی، جماعت اسلامی کے قومی جنرل سکریٹری محمد سلیم نے مرکزی حکومت پر طلاق ثلاثہ پر سیاست کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اس کی حقیقت بیان کرنے اور شریعت میں اس کے دوسرے پہلوؤں پر روشنی ڈالنے کے لئے ان کی تنظیم ملگ گیربیداری مہم چلا ئے گی۔
انجینئر سلیم نے آج یہاں صحافیوں سے کہا کہ مرکزی حکومت تین طلاق کی آڑ میں کامن سول کوڈ نافذ کرنے کی تیاری میں ہے۔ اگر ایسا ہوا تو اس سے محض مسلمان نہیں، معاشرے کے دوسرے تمام طبقات بھی متاثر ہوں گے، جو اپنے عقیدے اور روایات کی بنیاد پر شادی بیاہ کرتے چلے آرہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ تین طلاق کی حقیقت سے زیادہ تر لوگ واقف نہیں ہیں۔ سوال صرف تین طلاق کا نہیں بلکہ شریعت کا ہے، جس میں نکاح، میراث وغیرہ کے معاملے بھی آتے ہیں۔ان معاملات پر بیداری کے لئے جماعت اسلامی طویل وقت سے کام کر رہی ہے۔ اب اس مہم کو ترجیح دینے کا خاکہ تیار کیا گياہے۔ اس کے تحت 15 کروڑ لوگوں تک صحیح بات پہنچانے کا ہدف طے کیا گیا ہے۔ اس کے تحت ملک بھر میں 10 ہزار بڑے پروگرام کئے جائيں گے۔ 500 مشاورتی سینٹر بھی کھولے جائیں گے۔ان میں طلاق سے متعلق معاملات حل کئے جائیں گے۔مسلم علاقوں میں جاکر لوگوں تک صحیح بات پہنچائیں گے۔
مساجد کے امام سے بھی کہا ہے کہ خطبہ جمعہ میں لوگوں کو طلاق کا صحیح طریقہ اور ور اثت وغیرہ کے بارے میں تفصیل سے معلومات دیں۔ خواتین کو والد، شوہر، بھائی، بیٹے کی جائیداد میں بھی شریعت نے حصہ دینے کا بندوبست کیاہے۔ شادی کا صحیح طریقہ بھی بیان کریں اور یہ بتائیں کہ اسلام میں بارات کا کوئی ذکر نہیں ہے۔

Similar Posts

Share it
Top