نوٹ کی منسوخی سے معیشت کو ڈیجیٹل بنانے میں مدد ملی

بھارت

نوٹ کی منسوخی سے معیشت کو ڈیجیٹل بنانے میں مدد ملی

نئی دہلی، وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے آج کہا کہ نوٹ کی منسوخی سے معیشت کو ڈیجیٹل بنانے میں مدد ملی ہے اور اس سلسلے میں ترقی، مہنگائی، ڈیمانڈ اور دیگر معاملات میں کی جانے والی قیاس آرائی غلط ثابت ہوئی ہے۔
مسٹر جیٹلی نے آج یہاں نجی شعبے کے سب سے بڑے بینک آئی سی آئی آئی کی طرف بنائے گئے ملک کے 100 ڈیجٹلائزڈ گاؤں کو قوم کو وقف کرتے ہوئے کہا کہ نوٹ کی منسوخی کے بارے میں کچھ لوگ معیشت میں دو فیصد تک کی کمی آنے، مہنگائی بڑھنے اور ڈیمانڈ گھٹنے کا اندازہ لگا رہے تھے لیکن ان کا یہ اندازہ غلط ثابت ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوٹ کی منسوخی سے کیش لیس معیشت اور ڈیجیٹل لین دین کو تیز رفتار دینے میں مدد ملی ہے۔
انہوں نے اس معاملے میں سویڈن کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ وہ مکمل طور پر ڈجٹلائزڈ معیشت ہے جہاں نقد لینے کے لئے در در بھٹکنا پڑتا ہے۔ ہندوستان ابھی تک سویڈن کی سطح تک نہیں پہنچا ہے لیکن ہم اس سمت میں تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے مالیاتی شمولیت پروگرام کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ڈیجیٹل کی جانب بڑھا دیا گیا یہ پہلا قدم تھا۔ بینکاری صنعت نے مالیاتی شمولیت میں اہم کردار ادا کیا اور ابھی بینک دیہات کو ڈیجیٹل بنانے کی سمت میں آگے بڑھ رہے ہیں۔ مسٹر جیٹلی نے آئی سی آئی سی آئی بینک کی اس پہل سے دوسرے بینکوں کو بھی سبق لینے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ آئی سی آئی سی آئی بینک اس سال کے آخر تک 500 اور دیہات کو ڈیجیٹل بنانے کی تیاری کر رہا ہے۔
اس موقع پر آئی سی آئی سی آئی بینک کی منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر چندہ کوچر نے کہا کہآئی سی آئی سی آئی گروپ کا یہ نظریہ رہا ہے کہ کسی بھی قوم کی بنیاد اس کے دیہات کے خوشحال ہونے سے مضبوط ہوتی ہے۔ اسی سلسلے میں ہمارے نظریہ 'مضبوط گاؤں، خوش حال ہندوستان ' کے تحت پورے ملک میں 100 دن کے اندر اندر 100 دیہات کو ڈیجیٹل بنایا گیا ہے۔

Similar Posts

Share it
Top