شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کے لئے وزیراعظم آستانہ روانہ

بھارت

شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کے لئے وزیراعظم آستانہ روانہ

نئی دہلی، وزیر اعظم نریندر مودی شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لئے قزاخستان کی راجدھانی آستانہ کے دو روزہ دورے پر آج روانہ ہو گئے۔
سربراہی اجلاس میں ہندستان کو اس علاقائی تنظیم میں مکمل رکن کے طورپر شامل کئے جانے کی رسمی کارروائی پوری کی جائے گی۔ مسٹر مودی نے آستانہ روانہ ہونے کے موقع پر جاری ایک بیان میں کہاکہ ایک رکن کے طورپر ہندستان کے شامل ہونے کے بعد ایس سی او میں دنیا کی مجموعی آبادی کے 40 فیصد کی نمائندگی ہوجائے گی اور اس کے ساتھ ساتھ ہندستان کو رکن ممالک کے ساتھ اقتصادی، باہمی رابطہ اور دہشت گردی کے خلاف مہم علاوہ دیگر شعبوں میں تعاون کے مواقع بڑھانے میں بھی مدد ملے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایس سی او کے رکن ممالک کے ساتھ ہندستان کے طویل مدتی تعلقات رہے ہیں ایسے میں اس میں شامل ہوناہندستان کے لئے ہر لحاظ سے فائدہ مند ہوگا۔ سبھی ملکر اپنی پوری صلاحیت کے ساتھ مشترکہ مفادات کی حفاظت اور مشترکہ چیلنجوں سے نپٹنے میں باہمی تعاون کو بڑھا سکیں گے۔
وزیراعظم 9 جون کو آستانہ میں 'مستقبل کی توانائی' کے مو ضوع پر ایک نمائش کا افتتاح بھی کریں گے۔ شنگھائی تعاون تنظیم 2001 میں قائم ہوئی تھی۔ ہندوستان 2005 سے اس تنظیم کا مبصرملک رہا ہے اور اس نے 2014 میں مکمل رکنیت کے لئے درخواست دی تھی۔ اس تنظیم کے چھ رکن ہیں۔ چین، قزاخستان ، کرغزستان، روس، تاجکستان اور ازبکستان۔
تنظیم کے قیام کے بعد پہلی بار ایسا ہورہا ہے جب ہندستان کو شامل کرنے کے لئے اس کی رکنیت میں توسیع کی جارہی ہے۔ ایس سی او کی رکنیت کے لئے ہندستان رکنیت شرا ئط اور جوابدہی والے 38نکات کے چارٹر پر دستخط کرچکا ہے۔
آستانہ میں سربراہی اجلاس سے الگ وزیر اعظم نریندر مودی کی چین کے صدر شی جن فنگ کے ساتھ دو طرفہ میٹنگ ہو سکتی ہے۔ یہ میٹنگ ایسے وقت پر ہونے والی ہے جب نیوکلےئر سپلائر گروپ(این ایس جی) میں ہندستان کو شامل کئے جانے کی چین سخت مخالفت کررہا ہے۔
پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف بھی یہاں پہنچ رہے ہیں لیکن وزیر اعظم مودی اور پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف کے مابین ملاقات کا فی الحال کوئی پروگرام نہیں ہے۔
قزاخستان میں ہندوستان کے سفیر ہرش کمار جین کے مطابق اس تنظیم میں مکمل رکن کے طور پر ہندوستان کو شامل کئے جانے سے منسلک تمام کام پورے کر لیے گئے ہیں۔

Similar Posts

Share it
Top